88

گلگت بلتستان کیلئے ترقیاتی پیکیج سے گلگت بلتستان کی تاریخ بدل جائے گی، وزیر اعلیٰ

اسلام آباد (پ ر) وزیر اعلیٰ گلگت  بلتستان خالد خورشید کی زیر صدارت گلگت  بلتستان کیلئے ترقیاتی پیکیج کی تیاری کے حوالے سے ایپکس کمیٹی کے دوسرے اجلاس میںفیصلہ کیا گیا کہ حکومت گلگت  بلتستان توانائی کے منصوبوں کی فزیبلٹی منسٹری آف واٹر ریسورس کو فراہم کرے گی۔ سوئی ناردرن گیس پائپ لائن گلگت میں جاری ایئرمکس منصوبے کی تکمیل کیلئے حکومت گلگت  بلتستان کو مقررہ وقت کا تعین کرے گی۔ ایپکس کمیٹی کے اجلاس میں پاکستان سٹیٹ آئل کوآئندہ ایپکس کمیٹی اجلاس سے قبل سکردو میں ڈپو کے قیام کیلئے فزیبلٹی رپورٹ پیش کرنے کی ہدایت کی گئی ۔ اجلاس میں پی ٹی اے کو گلگت  بلتستان میں 3جی اور4جی لائسنس کی نیلامی کو بھی حتمی شکل دینے کیلئے کہا گیا۔ نیشنل ہائی وے اتھارٹی ترقیاتی پیکیج کے متعلقہ منصوبوں کی فزیبلٹی آئندہ ایپکس کمیٹی اجلاس میں پیش کرنے کو یقینی بنائے گی۔ ایپکس کمیٹی اجلاس میں وزیر اعلیٰ گلگت  بلتستان خالد خورشید اور وفاقی وزیر امور کشمیر وگلگت  بلتستان علی امین گنڈا پور نے گلگت چترال ہائی وے اور شونٹر ٹنل کی اہمیت اور افادیت کواجاگر کیا۔ ایپکس کمیٹی اجلاس میں اس بات کا بھی فیصلہ کیا گیا کہ تجارت کے فروغ کیلئے ایکسپو سنٹر تعمیر کرنے کیلئے حکومت گلگت  بلتستان زمین کی فراہمی یقینی بنائے گی۔ سکردو کیلئے سیوریج منصوبے کی فزیبلٹی کی تیاری نامورکنسلٹنٹ فرم سے کرائی جائے گی جس کے بعد اس منصوبے کا پی سی ون ترجیحی بنیادوں پر تیار کیا جائے گا۔ ایپکس کمیٹی اجلاس میں وزیر اعلیٰ گلگت  بلتستان خالد خورشید نے تمام متعلقہ وزارتوں کو 4مارچ 2021تک گلگت  بلتستان کیلئے ترقیاتی پیکیج کے منصوبوں کی فزیبلیٹی اور پی سی ون تیار کرنے کا کہا۔ وزیراعلیٰ گلگت  بلتستان خالد خورشید نے کہا کہ گلگت  بلتستان کے پی ایس ڈی پی منصوبوں خصوصاً امراض قلب کے ہسپتال کیلئے فنڈز کی الوکیشن میں اضافہ کیا جائے تاکہ منصوبے مقررہ مدت میں مکمل کئے جاسکیں۔ڈپٹی چیئرمین پلاننگ کمیشن نے گلگت  بلتستان کے محکموں کی استعدادکار میں اضافے کیلئے ایک خصوصی پروجیکٹ شامل کرنے کی تجویز دی جس کو منظور کرتے ہوئے فیصلہ کیا گیا کہ انجینئرز کی تربیت کیلئے مختصر اور جامع منصوبہ شروع کیا جائے گا۔ ایپکس کمیٹی اجلاس میں وزیر اعلیٰ گلگت  بلتستا ن خالد خورشید نے کہا کہ گلگت  بلتستان کیلئے ترقیاتی پیکیج اپنی نوعیت کا پہلا پیکیج ہے اس پیکیج سے گلگت  بلتستان کی تاریخ بدل جائے گی۔ گلگت  بلتستان کے عوام کی معیار زندگی میں بہتری آئے گی اور عملی طور پر تعمیر و ترقی کو ممکن بنایا جاسکے گا۔ تمام متعلقہ وزارتیں منصوبوں کی پی سی ون کی تیاری کے عمل کو تیز کریں اور جلداز جلد منصوبوں کے پی سی ون کی تیاری کو یقینی بنائیں۔ایپکس کمیٹی اجلاس میں درجہ ذیل منصوبوں کی پیش رفت کا بھی جائزہ لیا گیا ، کلین انرجی کے تحت گلگت بلتستان میں بجلی بحران کو ختم کرنے میں مدد ملے گی ۔ 20میگاواٹ ہینزل ہائیڈل پاور پراجیکٹ ، 16میگاواٹ نلتر ہائیڈل پاور پراجیکٹ ، 26میگاواٹ شغر تھنگ ہائیڈل پاور پراجیکٹ ، 50میگاواٹ عطاء آباد پاور پراجیکٹ ، 30میگاواغواڑی پاور پراجیکٹ ، بجلی کے ان اہم منصوبوں کی رفتار تیز سے تیز تر کرنے کی ہدایات کی گئیں ۔ ٹرانسپورٹ اور کمیونکیشن سیکٹر میں استور ویلی روڈ، تھلچی تا شونٹر ، شغر تھنگ تا گریکوٹ روڈ ، شاہراہ نگر ، ساٹح کلو میٹر ویلی روڈ تانگیر داریل اور شگر پیجو روڈ منصوبوں کی پیش رفت کا جائزہ لیتے ہوئے وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان اور وفاقی وزیر امور کشمیر و جی بی نے کہا کہ وزیر اعظم پاکستان تھلچی تا شونٹر روڈ میں خصوصی دلچسپی لے رہے ہیں لہذا اس منصوبے کی این ایچ اے سے فزیبلیٹی کرائی جائے اور اس منصوبے کو آگے بڑھانے پر ترجیحی بنیادوں پر کام کیا جائے۔