Image

سفارش کی وجہ سے معاشرے کا بیڑہ غرق ہوگیا، ناجی

بالاورستان فرنٹ کے سپریم لیڈر نواز خان ناجی نے کہا ہے کہ اس ایوان میں بجٹ پیش ہوتا ہے اور منظور بھی ہوتا ہے مگر بجٹ غلط استعمال ہوتا ہے اور کرپشن کی نذر ہوتا ہے، 1947ءسے اب تک وفاق سے جو بجٹ ہمیں ملا ہے اگر ہم درست طریقے سے استعمال کرتے تو گلگت بلتستان کب کا سوئٹزرلینڈ بن چکا ہوتا۔ انہوں نے گزشتہ روز ایوان میں بجٹ پر ہونے والی بحث پر حصہ لیتے ہوئے کہاکہ بجٹ کو درست طریقے سے استعمال کرنا اس اسمبلی کی ذمہ داری ہے۔ انہوں نے کہاکہ تحریک انصاف کرپشن کے خاتمے کا نعرہ لگا کر اقتدار میں آئی تھی مگر گلگت بلتستان میں احتساب کےلئے اور کرپشن کو روکنے کےلئے تحریک انصاف کی وفاقی حکومت نے کچھ بھی نہیں کیا۔ انہوں نے کہاکہ ہم نے سفارش کو ایمان کا حصہ بنا لیا ہے۔ پورا معاشرہ سفارش کی وجہ سے غرق ہوا ہے، میرٹ پامال ہوا ہے انہوں نے کہاکہ لوگ راتوں رات کروڑ پتی بنتے ہیں۔ روزانہ کی بنیاد پر پلازے تعمیر ہو رہے ہیں، کوٹھیاں تعمیر ہو رہی ہیں۔ یہ غریب لوگوں کے پیسے سے ہورہے ہیں مگر گلگت بلتستان میں کوئی پوچھنے والا نہیں ہے کہ ان پلازوں کےلئے پیسہ کہاں سے اور کیسے آتا ہے