عوام کے حقوق کیلئے آخری حد تک جائیں گے، ایکشن کمیٹی

عوامی ایکشن کمیٹی گلگت بلتستان کا گندم کوٹے میں کٹوتی اور گندم کی چوری ، بجلی کی طویل لوڈشیڈنگ ، خالصہ سرکار کے نام پر عوامی ملکیتی زمینوں کی بندربانٹ ، گلگت بلتستان کے پہاڑوں کے غیرقانونی لیزز مہنگائی بیروزگاری سمیت حکومت کی عوام دشمن پالیسیوں کیخلاف بڑا احتجاجی جلسہ علمدار چوک نومل میں منعقد ہوا جلسے میں عوامی ایکشن کمیٹی کے مرکزی قائدین چئیرمین فداحسین ، وائس چئیرمین سید یعصب الدین ، جنرل سیکرٹری مولانا تنویر حیدری ، کو آرڈنیٹر گلگت جہانزیب انقلابی ، مرکزی ترجمان ظہیر قاسمی اور سیکرٹری انفارمیشن یوتھ زبیر احمد  نے شرکت کی۔ امام جمعہ والجماعت و مرکزی خطیب نومل علامہ شیخ نئیر عباس مصطفوی نیجلسے میں خصوصی شرکت کی اور عوامی ایکشن کمیٹی کے قائدین کو نومل میں خوش آمدید کہا جلسے میں عمائدین نومل ،  یوتھ اور عوام کی کثیر تعداد شریک ہوئیجلسے سے خطاب کرتے ہوئے شیخ نئیر عباس نے کہا کہ گلگت بلتستان کی عوام کو ایک سازش کے تحت تقسیم رکھا گیا ہے اور کبھی بھی قومی حقوق کیلئے ایک موقف پہ متحد ہونے نہیں دیا گیا ہمیں متحد ہوکر ایک موقف پر آنے کہ ضرورت ہے  ہم سب عوامی ایکشن کمیٹی کا حصہ ہیں اور گندم سبسڈی کی بحالی اور عوامی مسائل کے حل کیلئے جہاں تک جانا ہوگا جائینگے نومل کی عوام عوامی ایکشن کمیٹی کے ساتھ ہے جب بھی عوامی ایکشن کمیٹی کال دیگی نومل کی عوام اٹھ کھڑی ہوگی چئیرمین عوامی ایکشن کمیٹی فداحسین نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ عوامی ایکشن کمیٹی کا بنیادی مقصد عوامی مسائل کا حل اور قومی و علاقائی وسائل کا تحفظ ہے جہاں بھی عوام کے وسائل کی لوٹ مار کی کوشش ہوگی ایکشن کمیٹی رکاوٹ بنے گی وزیر خوراک جو کہتے تھے کہ ان کی مرضی کے بغیر چڑیا پر نہیں مار سکتی لیکن گندم کی ہزاروں بوریاں غائب ہو رہی ہیں وزیر صاحب یا تو نااہل ہیں جنکو اتنی بڑی چوری نظر نہیں آرہی یا پھر وہ بھی اس لوٹ مار میں حصہ دار ہیں ایک ہفتے سے نومل اندھیرے میں ڈوبا ہوا ہے لیکن ابھی تک بجلی بحال نہ ہونا حکومت اور محکمہ برقیات کی نالائقی ہے  عبوری صوبے کے نام پر گلگت بلتستان کے وسائل کو ہڑپنے کا منصوبہ تیار کیا گیا ہے اگر حکمران گلگت بلتستان کو حقوق دینے میں سنجیدہ ہیں تو گلگت بلتستان کی متنازع حیثیت کو مدنظر رکھتے ہو اقوام متحدہ کی قراردادوں کی روشنی میں ہماری حیثیت کا تعین کرے حکومت ایک ہفتے کے اندر گندم سبسڈی کی بحالی کو یقینی بنائے اور گندم چوری میں ملوث افراد کو بے نقاب کرے اور بجلی کی لوڈشیڈنگ پر قابو پائے بصورت دیگر عوامی ایکشن کمیٹی پورے گلگت بلتستان میں احتجاج کی کال دیگی وائس چئیرمین سید یعصب الدین نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ عوامی ایکشن کمیٹی رابطہ مہم کے زریعے عوام کو بیدار کر چکی ہے اب عوام مزید یہ ظلم زیادتی برداشت نہیں کرینگے حکومت وعدوں سے نکل کر حقیقی اقدامات کرے اور گندم کوٹے کو فوری بحال کریسیکرٹری جنرل عوامی ایکشن کمیٹی مولانا تنویر حیدری نے خطاب میں کہا کہ حکمران عوام کو ستر سالوں سے صرف سہانے خواب دکھا رہے ہیں جبکہ حقیقت اس کے بالکل برعکس ہے ہمیں قومی حقوق کے حصول کیلئے متحد ہوکر جدوجہد کرنے کی ضرورت ہے کوآرڈنیٹر گلگت جہانزیب انقلابی نے خطاب میں کہا کہ گلگت بلتستان کی عوام ایک قوم ہے انہیں جانور نہ سمجھا جائے آرڈر نوکروں اور پیکیجز خانہ بدوشوں کو دئے جاتے ہیں گلگت بلتستان کی عوام نہ کسی کے نوکر ہیں نہ ہی خانہ بدوش  ہم اپنے حقوق کے حصول کیلئے ہر حد تک جانے کو تیار ہیں۔