کرونا پھیلائو تھم گیا، کوشش ہے عید پرپ ابندیاں نہ لگانا پڑیں،اسد عمر

ملک میں کرونا سے مزید 43 افراد انتقال کرگئے جب کہ کرونا کیسز میں بتدریج کمی واقع ہورہی ہے اور گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران کرونا کے مثبت کیسز کی شرح 4.5 فیصد رہی۔ گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران ملک بھر میں کرونا کے 52223 ٹیسٹ کیے گئے جن میں سے 2117 افراد میں کورونا وائرس کی تصدیق ہوئی جب کہ وائرس سے 43 ہلاکتیں ہوئیں۔ملک میں کرونا سے اب تک مجموعی طور پر 20779 افراد انتقال کرچکے ہیں اور کل کیسز کی تعداد 9 لاکھ 21 ہزار  53 ہوچکی ہے جب کہ اب تک وائرس سے 8 لاکھ 41 ہزار 241  افراد صحتیاب بھی ہوئے ہیں۔دوسری جانب وفاقی وزیراسدعمر نے اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ چاہتے ہیں عید سے پہلے اتنی ویکسی نیشن ہو جائے کہ زیادہ بندشیں نہ لگانا پڑیں۔  وفاقی وزیر اسد عمر کا کہنا تھا کہ کرونا وبا کا پھیلا ئوتھم چکا ہے، کیسز میں بتدریج کمی آ رہی ہے اور کرونا سے نکلنے کا طریقہ بندشیں نہیں بلکہ اس سے نکلنے کا واحد حل ویکسی نیشن ہے، چاہتے ہیں بندشوں کو بتدریج ختم کیا جا سکے اور نارمل زندگی کی طرف جائیں۔اسد عمر نے کہا کہ چاہتے ہیں عید سے پہلے اتنی ویکسی نیشن ہو جائے کہ زیادہ بندشیں نہ لگانا پڑیں، پڑوسی ممالک کے مقابلے میں پاکستان میں کرونا سے کم نقصان ہوا جب کہ سندھ میں کرونا کا پھیلائو زیادہ ہے احتیاط کرنی ہوگی، کرونا بندشوں سے لوگوں کے کاروبار متاثر ہو رہے ہیں۔وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ  10جون تک تمام اساتذہ کی ویکسی نیشن مکمل کی جائے۔