شتونگ نالے کی فزیبلٹی کیلئے چونسٹھ کروڑ مختص

سینئر وزیر راجہ ذکریاخان مقپون نے کہاہے کہ سکردو شہر کی تعمیر وترقی کیلئے ماسٹرپلان تیارکرلیا گیاہے سکردو ڈویلپمنٹ اتھارٹی (ایس ڈی اے)کے تحت سکردو میں تقریباچار ارب کے منصوبوں پرکام ہورہاہے شہرکی ترقی کیلئے آج تک کسی حکومت نے ماسٹرپلان کے تحت کام نہیں کیا جس کی وجہ سے سکردو مسائل کی آماجگاہ بن گیا مگر ہماری حکومت باقاعدہ منصوبہ بندی کے تحت کام کررہی ہے۔ ان خیالات کااظہارانہوں نے سکردو میں اخبارنویسوں سے بات چیت کرتے ہوئے کیاانہوں نے کہاکہ گلگت بلتستان کی تقدیربدلنے کا وقت آچکاہے یہاں کے عوام کوجلدعبوری صوبے کے بارے میں بڑی خوشخبری ملے گی عبوری آئینی صوبہ یہاں کے عوام کا بنیادی مطالبہ رہاہے انہوں نے کہاکہ بلتستان معاشی حب بننے جارہاہے پہلی مرتبہ اس خطے کو اہم شاہراہوں کے ذریعے ملک کے دوسرے حصوں کے ساتھ منسلک کیاجارہاہے شغرتھنگ تا استور گوریکوٹ شاہراہ کیلئے زمینوں کے حصول کا عمل شروع ہوچکاہے شاہراہ کی تعمیر سے بلتستان اور راولپنڈی تک سفر دس گھنٹے کا رہ جائیگا انہوں نے کہاکہ شتونگ نالہ کو سدپارہ ڈیم میں شامل کرنے کیلئے عملی طورپر کام ہورہاہے فزیبلٹی کیلئے 64 کروڑ روپے مختص کردئیے گئے ہیں شتونگ نالہ کوسدپارہ ڈیم میں شامل کئے جانے سے آبپاشی کیلئے وافر مقدار میں پانی ملے گا اورسدپارہ ڈیم کی تعمیر کا فائدہ عوام کو ملے گاانہوں نے کہاکہ ہم تمام سیاسی مذہبی جماعتوں کے قائدین کو دعوت دیتے ہیں کہ وہ تلخیاں بھلاکر علاقے کی تعمیر وترقی کیلئے ہمارے ساتھ چلیں محاذ آرائی کی سیاست سے علاقے کو ناقابل تلافی نقصان پہنچا ہمیں اپنی صفوں میں اتحاد ویگانگت پیدا کرنے کی جتنی ضرورت اس وقت ہے اتنی ضرورت کبھی نہیں پڑی گالم گلوچ کی سیاست کا خطہ متحمل نہیں ہوسکتا ہم شروع دن سے مخالفین کو دعوت دے رہے ہیں کہ وہ ہمارے ساتھ چلیں ان کے جائز مطالبات منظور کئے جائیں گے علاقہ ہم سب کا ہے اس کی ترقی کیلئے بھی ہم سب کو سیاسی تلخیاں بھلاکر کام کرنا ہوگاایک دوسرے کی ٹانگ کھینچنے کی روش جب تک ختم نہیں کریں گے تب تک ہمارا علاقہ ترقی نہیں کرسکتا انہوں نے کہاکہ علاقے کی تعمیر وترقی کی راہ میں رکاوٹ ڈالنے والے عوام کے ساتھ مخلص نہیں ہوسکتے یہ لوگ درپردہ دشمن ملک کے ایجنڈے کی تکمیل چاہتے ہیں انہوں نے کہاکہ ہم علاقے کے عوام کی خدمت پر یقین رکھتے ہیں ہم عوام کے مفادات پر کبھی کوئی سودا بازی نہیں کریں گے بلتستان کے حقوق پر کبھی کوئی کمزوری دکھائی ہے اورنہ ہی آئندہ دکھائیں گے انہوں نے کہاکہ سکردو حلقہ نمبر1 اور 2 میں اربوں روپے کی ترقیاتی سکیموں پر کام ہورہاہے تاریخ میں پہلی بار یہاں ترقیاتی سکیمیں میرٹ پر تقسیم کی جارہی ہیں انہوں نے کہاکہ اپوزیشن ارکان اسمبلی کو بھی کروڑوں روپے کے فنڈز دئیے گئے ہیں حالانکہ ماضی میں اپوزیشن ارکان کو دیوار سے لگایاگیا ہم نے اپوزیشن کو بھی اچھے خاصے فنڈز دئیے ہیں انہوں نے کہاکہ زمینوں کی غیرمقامی افرادکو فروخت کرنے پر پابندی عوامی مطالبے کی تائیدہے یہاں کے عوام شروع سے یہی مطالبہ کررہے تھے کہ غیرمقامی افراد کو یہاں کی زمینیں فروخت کرنے سے روکا جائے ہماری حکومت نے عوام کے مطالبے کومنظورکرلیا اور غیر مقامی افراد کو زمینیں فروخت کرنے پر دفعہ 144 کے تحت پابندی لگادی۔