جی بی میں خواتین چیمبر آف کامرس بنایا جائے، عبید اللہ بیگ

وزارت تجارت و ٹیکسٹائل اور ٹریڈ ڈویلپمنٹ اتھارٹی آف پاکستان (ٹی ڈی اے پی)کے تعاون سے گلگت میں چین پاکستان فری تجارت کے معاہدے کے دوسرے مرحلے پر آگاہی سیمینار کا انعقاد کیا۔  گلگت بلتستان کے سینئر وزیرکرنل (ر) عبید اللہ بیگ، مہمان خصوصی تھے۔انہوں  نے اپنے خطاب  میں وزارت تجارت اور تجارتی ترقیاتی اتھارٹی آف پاکستان کا شکریہ ادا کیا کہ اس کے لئے آگاہی پروگرام کا اہتمام کیا جائے۔انہوں نے کہا کہ گلگت بلتستان میں مردوں کے ساتھ ساتھ خواتین بھی ٹریڈ ڈویلپمنٹ کے میدان میں قدم رکھ چکی ہیں لہذا گلگت بلتستان میں خواتین کا بھی چیمبر آف کامرس بنانے کی ضرورت ہے ملک کے دیگر صوبوں میں خواتین چیمبر آف کامرس کے ذریعے سے بڑے بڑے منصوبوں پر کام کر رہی ہیں گلگت بلتستان میں بھی خواتین کا چیمبر آف کامرس بنایا جائے صوبائی حکومت تاجر خواتین کی ترقی کے لئے بھر پور تعاون کرے گی انہوں نے کہا گلگت بلتستان کی تاجر برادری اور لوگوں سے اس سے زیادہ سے زیادہ فائدہ اٹھانے کی اپیل کی۔انہوں نے کہاگلگت میں ڈسپلے / ایکسپو سنٹر اس خطے کی ضرورت ہے تاکہ تمام اسٹیک ہولڈر اپنی مصنوعات کو ظاہر کرسکیں اور اس خطے میں کاروبار بڑھاسکیں۔ سینئر وزیرنے زور دیا کہ گلگت بلتستان کے تجارت و تجارت میں اضافے کے لئے حکومت پاکستان کا تعاون، صوبائی حکومت کی کاوشوں کے برابر ہے۔وزارت تجارت کے سینئر جوائنٹ سیکرٹری عصمت نواز نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ معین سی پی ایف ٹی اے ـ2 کے تحت، چین نے پاکستان کے برآمدی مفاد میں 313 اعلی ترجیحی ٹیرف لائنوں پر محصول کو ختم کردیا ہے جس سے پاکستان کو ترجیحی سلوک مہیا ہوگا۔ انہوں نے بتایا کہ حفاظتی اقدامات اور ادائیگی کی شقوں کا توازن مقامی صنعت کو بچانے کے لئے اس سی پی ایف ٹی اے II کے تحت شامل کیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ خنجراب پاس سے ہونے والی تجارت اور چیلنجوں سے متعلق اگست 2021 میں ایک اور سیمینار کا اہتمام کیا جائے گا۔قراقرم انٹر نیشنل یونیورسٹی کے وائس چانسلر پرو فیسر ڈاکٹر عطاء اللہ شاہ نے خطاب کرتے ہوئے برآمدی مصنوعات میں تحقیق اور جدت طرازی کی تبدیلی اور جدت طرازی کے ذریعے گلگت بلتستان میں علاقائی تجارت کو فروغ دینے میں اکیڈمیہ کے کردار پر روشنی ڈالی۔ اس مقصد کے لئے کے آئی یو نے یونیورسٹی میں ''پاکستان بزنس انکیوبیشن سینٹر'' کے ساتھ ساتھ، تحقیقی، انوویشن اور کمرشلائزیشن آفس قائم کیا ہے۔انہوں نے کہا کہ قراقرم انٹر نیشنل یونیورسٹی میں احساس سکالر شپ کی مد میں کروڈوں روپے ادا کئے گئے ہیں جس میں سے 50 فیصد سکالر شپ صرف طالبات کودیئے گئے ہیں۔ فیڈریشن آف پاکستان چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری (ایف پی سی سی آئی) کے نمائندے قربان علی نے گلگت بلتستان کی تاجر برادری کے لئے آگاہی سیمینار کی اہمیت کے بارے میں گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ قابل قدر کاروباری معلومات کی اس طرح کی منتقلی سب سے زیادہ فائدہ مند ہے ۔ انہوں نے مزید کہا کہ ٹی ڈی اے پی کو گلگت بلتستان کے تمام علاقائی چیمبروں کے ذریعے خطے میں آئندہ کی تمام  سرگرمیوں میں مکمل تعاون فراہم کیا جائے گا۔مشیر، ٹی ڈی اے پی کراچی کمال شہیر یار نے سی پی ایف ٹی اے ـ2 کے مختلف پہلوؤں کے بارے میں ایک تفصیلی پریزنٹیشن پیش کی اور اس ایف ٹی اے سے حاصل ہونے والے سیکٹر وائز فوائد کے بارے میں بصیرت فراہم کی۔ انہوں نے وضاحت کی کہ سی پی ایف ٹی اے ـ2 میں، پاکستان غیر متزلزل لبرلائزیشن سے فائدہ اٹھاتا ہے اور اسے آسیان ممالک کے ساتھ چین کے ساتھ تجارت میں مساوی رکھتا ہے۔ یہ بھی بتایا گیا کہ سیف گارڈ اقدامات، الیکٹرانک ڈیٹا ایکسچینج اور ایک وسیع حساس فہرست کا استعمال جو سی پی ایف ٹی اےـ II کے نفاذ کو معنی خیز بنائے گا۔پروگرام کا اختتام سوال و جواب کے ایک سیشن کے ساتھ ہوا، جس میں شرکا کی تمام سوالات کا بھرپور جواب دیا گیا۔ اختتامی کلمات اسسٹنٹ ڈائریکٹر، ٹی ڈی اے پی کے ذریعہ پیش کیے گئے جس کے تحت تمام شرکاء اور تعلیمی، وفاقی اور صوبائی حکومتوں کے نمائندوں کا شکریہ ادا کیا گیا اور گلگت بلتستان کے لئے ڈائریکٹوریٹ جنرل ٹی ڈی اے پی اسلام آباد کے اقدامات بشمول گلگت کے ایک ڈسپلے سنٹر ہنزہ چیمبر کے لئے 80 ملین کے ای ڈی ایف پروجیکٹ سمیت، ایک میگا ایونٹ ''تجارت برائے تجارت'' اور سیمینار میں ''خنجراب کے راستے سے گزرنے والی تجارت'' کا ذکر کیا گیا۔سیمینار میں جی بی چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری (جی بی سی سی آئی) اور منی و زیورات کی تازہ تجارتی تنظیموں، تازہ پھل، خشک میوہ جات اور دستکاری صنعت کی بڑی تعداد میں کاروباری افراد نے سیمینار میں شرکت کی۔ سیمینار میں قراقرم انٹرنیشنل یونیورسٹی (KIU) کے نمائندوں نے بھی جدید صنعتی دور کے لئے تجارتی اکیڈمیہ رابطے کی اہمیت کے پیش نظر شرکت کی۔ شریک میزبان صدر ہونے کے ناطے جی بی سی سی آئی نے اپنے خوش آمدید نوٹ میں تمام مہمانوں کا شکریہ ادا کیا اور جی بی چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کا گہرائی تعارف اور ٹی ڈی اے پی کے ذریعہ چیمبر کے اشتراک سے منصوبہ بندی کی گئی سرگرمیوں کا گہرائی سے تعارف پیش کیا۔