غلام حسین پارٹی غدار، ان سے معافی نہیں مانگی، سلطان علی


 سکردو(چیف رپورٹر) مسلم لیگ ن ضلع گانچھے کے صدر و سابق رکن کونسل حاجی سلطان علی خان نے سابق رکن اسمبلی غلام حسین ایڈووکیٹ کے اس بیان پر شدید ردعمل کا اظہار کیا ہے جس میں انہوں نے کہاتھا کہ سلطان علی خان سے اختلافات کی بنیاد پر انہوں نے تابان گروپ میں شمولیت اختیار کی تھی تاہم سلطان کی طرف سے معافی مانگے جانے کے بعد انہوں نے تابان گروپ کو خیر باد کہہ دیا کے پی این سے بات چیت کرتے ہوئے مسلم لیگ ن کے ضلعی صدر حاجی سلطان علی خان نے کہاہےکہ غلام حسین ایڈووکیٹ مسلم لیگ ن کے بڑے غدار ہیں ان کو 2020 کے الیکشن میں پارٹی ٹکٹ دیکر ہم نے بڑی سیاسی غلطی کی وہ مسلم لیگ ن کو چھوڑ کر تابان گروپ میں گئے تھے اب پھر ہمارے پاس آنے کی کوشش کررہے ہیں ہم ان کو لفٹ نہیں دے رہے ہیں اس لئے وہ اول فول بک رہے ہیں میں نے ان سے کوئی معافی مانگی نہ ہی ان کو واپس آنے کی دعوت دی میں نے بڑے بڑے سیاسی لوگوں کا مقابلہ کیا ہے اور انہیں ناکوں چنے چبوانے پر مجبور کیا ہے چی چاہے کہ میں غلام حسین ایڈووکیٹ جیسے پارٹی کے غدار سے معافی مانگوں اور ان کو پارٹی میں آنے کی دعوت دوں غلام حسین ایڈووکیٹ کا پارٹی سے کوئی تعلق نہیں ہے ان کے بارے میں فیصلہ پارٹی کی مرکزی قیادت کرے گی یہ فضول باتیں کرکے ہماری سیاسی ساکھ کو نقصان کو پہنچانے کی کوشش کررہے ہیں۔